Connect with us

پاکستان

پاکستان اور روس کے درمیان روڈ ٹرانسپورٹ سے متعلق اہم معاہدہ

Published

on

پاکستان اور روس کے درمیان روڈ ٹرانسپورٹ سے متعلق اہم معاہدہ

پاکستان اور روس کے درمیان روڈ ٹرانسپورٹ سے متعلق اہم معاہدہ

ماسکو: اشتیاق ہمدانی
وفاقی وزیر مواصلات و پوسٹل سروسز اسعد محمود نے کہا ہے کہ پاکستان اور روس کے درمیان روڈ ٹرانسپورٹ سے متعلق اہم معاہدہ کیا گیا ہے جس سے دونوں ممالک کے مابین تجارتی و عوامی روابط قائم کرنے کی راہ ہموار ہو گی اس سلسلہ میں وفاقی وزیر مواصلات اسعد محمود نے روس کے وزیر ٹرانسپورٹ وٹالی سیویلیف سے اہم ملاقات کی۔ ملاقات کے دوران بین الاقوامی روڈ ٹرانسپورٹ کے معاہدے پر دستخط کئے گئے۔ بین الاقوامی تجارتی روٹ کے معاہدے پر دستخط کی تقریب کے دوران رشین فیڈریشن کے وزیر ٹرانسپورٹ Vitaly Gennadyevich Savelyev اور پاکستان کی جانب سے وزیر مواصلات اسد محمود نے روسی فیڈریشن کی حکومت اور اسلامی جمہوریہ پاکستان کی حکومت کے درمیان بین الاقوامی تجارتی روٹ کے معاہدے پر دستخط کئے۔

اس موقع پر وزیر مواصلات نے کہا کہ روس وسائل سے مالا مال اور تکنیکی طور پر ترقی یافتہ ملک ہے۔یہ معاہدہ دونوں ممالک کے مابین تجارتی و عوامی روابط قائم کرنے کی راہ ہموار کرے گا۔ انہوں نے کہا کہ یہ معاہدہ دونوں ممالک کے درمیان مسافروں اور سامان تجارت کی نقل و حرکت کے بارے ایک فریم ورک مہیا کرے گا جس کے بعد پاکستان اور روس کے مابین سڑک کے ذریعے سفر اور سامان کی باآسانی ترسیل ممکن ہو سکے گی ۔ واضح رہے پاکستان اور روس کے درمیان تجارتی تعلقات میں یہ ایک اہم پیش رفت ہے، دونوں ممالک کے درمیان تجارت کے حجم کو بڑھانے کے لئے روسی فیڈریشن کی حکومت اور اسلامی جمہوریہ پاکستان کی حکومت کے درمیان اس معاہدے پردستخط ایک ایسے وقت میں ہوئے ہیں جب پاکستان کو شدید مالی چیلنجز درپیش ہیں.

یاد رہے پاکستان سے روس کو متعدد مصنوعات برآمد کی جاتی ہیں جن میں سبزی ، پھل ،کپڑا ، آلات جراحی ، چمڑا اور کھیلوں کا سامان شامل ہے.۔ روس ایل این جی برآمد کرنے والا بڑا ملک ہے اور اس نے پاکستان کو ایل این جی برآمد کرنے والے دوسرے ممالک کے مقابلے میں کم قیمت میں ایل این جی فروخت کرنے کی پیشکش کی ہے ۔ اس معاہدے کی رو سے ٹرانسپورٹ آپریشنز روڈ ٹرانسپورٹ پرمٹ کی بنیاد پر کئے جائیں گے جو کہ ٹرانسپورٹرز کو دونوں ممالک کے مجاز حکام کی طرف سے مفت فراہم کئے جائیں گے۔آپریشنل قواعد و ضوابط پر اتفاق کرنے اور ان کےنفاذ سے متعلق مسائل کا جائزہ لینے کے لیے ایک مشتر کہ ورکنگ گروپ جلد تشکیل دیا جائے گا۔ اس معاہدے کے تحت دونوں ممالک کے درمیان تجارتی سرگرمیاں بڑھیں گی اور دونوں ممالک کو مالی فائدہ حاصل ہوگا.

پاکستان

جنرل عاصم منیر کو پاک فوج کی کمان سونپ دی گئی

Published

on

جنرل عاصم منیر کو پاک فوج کی کمان سسونپ دی گئی

جنرل عاصم منیر کو پاک فوج کی کمان سونپ دی گئی

اسلام آباد (صداۓ روس)
جنرل قمر جاوید باجوہ نے کمان کی چھڑی جنرل عاصم منیر کو سونپ دی، جنرل عاصم منیر نے بطور 17ویں آرمی چیف پاک فوج کی کمان سنبھال لی۔ آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ اپنی 6 سالہ مدت ملازمت مکمل کر کے اپنے عہدے سے سبکدوش ہو گئے۔ راولپنڈی جی ایچ کیو میں پاک فوج میں تبدیلی کمانڈ کی پُر وقار تقریب کا انعقاد ہوا۔ چیئرمین جوائنٹ چیفس آف اسٹاف کمیٹی جنرل ساحر شمشاد مرزا نے تقریب میں شرکت کی۔ تقریب کے مہمان خصوصی جنرل قمر جاوید باجوہ کی جنرل عاصم منیر کے ہمراہ پنڈال آمد پر گارڈز نے انہیں سلامی دی جس کے بعد تلاوت کلامِ پاک سے تقریب کا آغاز کیا گیا جس کے بعد جنرل قمر جاوید باجوہ کو الوداع گارڈ آف آنر پیش کیا گیا۔

آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ نے اعزازی گارڈ کا معائنہ کیا، اعزازی گارڈ نے سلامی کے چبوترے کے سامنے سے مارچ پاسٹ بھی کیا۔ تقریب کے شروع میں پاک فوج کے سبکدوش ہونے والے سربراہ جنرل قمر جاوید باجوہ اور جنرل عاصم منیر نے یادگار شہداء پر حاضری دی، جہاں پر شہداء کے لیے دعا کی گئی۔ اعزازی شمشیر یافتہ جنرل سید عاصم منیر کمان کی تبدیلی کی تقریب میں فور اسٹار جنرل کے شولڈر رینکس اور کالر میڈل لگا کر شریک ہوئے۔

جی ایچ کیو میں منعقدہ تقریب میں تمام مسلح افواج کے سربراہان، اعلیٰ سول، فوجی افسران شریک ہوئے، پُروقار تقریب میں سفارتکار اور صحافیوں نے بھی شرکت کی۔ اس کے علاوہ وزیرِ خارجہ بلاول بھٹو زرداری، وزیرِ داخلہ رانا ثناء اللّٰہ، وزیر خزانہ اسحاق ڈار اور وزیر اطلاعات مریم اورنگزیب نے بھی تقریب میں شرکت کی۔

Continue Reading

ٹرینڈنگ