Connect with us

تازہ ترین

سعودی عرب فلم سازی کی صنعت کامیابی کی جانب گامزن

Published

on

سعودی عرب فلم سازی کی صنعت کامیابی کی جانب گامزن

سعودی عرب فلم سازی کی صنعت کامیابی کی جانب گامزن

ریاض (انٹرنیشنل ڈیسک)
فلم سازی کی صنعت کے ماہرین کا کہنا ہے کہ سعودی عرب اس میدان میں درست سمت میں اپنا سفر جاری رکھے ہوئے ہے اور اس شعبے میں مسلسل ترقی دیکھی جا رہی ہے۔ سرکاری خبر رساں ادارے ’واس‘ کے مطابق مملکت میں مقامی سطح پر فلموں کی تیاری کے لیے سازگار ماحول فراہم کیا جا رہا ہے۔ س بات کا اظہار ’مملکت میں فلم سازی کا مستقل‘ کے عنوان سے ہونے والی ایک کانفرنس میں کیا گیا جس میں فلم ساز اور ڈیزائنر مالک نجر، ڈائریکٹر فیصل بالطیور اور سعودی سنیما ایسوسی ایشن کی صدر ھناء العمیر نے شرکت کی۔
اس کانفرنس کی نظامت امام دکتور سعید الزہرانی یونیورسٹی کے کالج آف میڈیا اینڈ کمیونیکشن کے اسسٹنٹ پروفیسر نے کی۔ سعودی سنیما کا مستقبل روشن ہے
سعودی فلم ڈائریکٹر فیصل بالطیور نے سعودی سنیما میں ہونے والے پیش رفتوں سے متعلق گفتگو کی۔ انہوں نے سعودی سنیما کی جدت اور اس کی مقامی اور بین الاقوامی فیسٹولز میں شرکت کو خوش آئند قرار دیا۔ انہوں نے سعودی فنکاروں کے اچھے مستقبل کی امید ظاہر کرتے ہوئے کہا کہ ابھی اس حوالے سے مستقل مزاجی سے مزید کام کرنے کی ضرورت ہے۔ فیصل بالطیور نے اپنی گفتگو میں سعودی سنیما کے فلم سازی کے میدان میں قائدانہ کردار کا ذکر کیا اور بتایا کہ مملکت کے پاس کس قسم کی ثقافتی و فنی صلاحیتیں موجود ہیں۔
انہوں نے کہا کہ یہی وہ خصوصیات ہیں جو سعودی عرب کو فلم سازی کی دنیا بالخصوص مقامی سطح پر فلم سازی کا مرکز بنائیں گی۔
فلم ڈائریکٹر مالک نجر نے اینیمیشن انڈسٹری کا ذکر کرتے ہوئے کہا کہ سعودی فلم سازوں کی مختلف فیسٹولز میں شرکت اس کے روشن مستقبل کی علامت ہے۔ انہوں نے کہا کہ ’اینیمیٹڈ فلموں کی تیاری میں نئے تجربات کیے جا رہے ہیں بالخصوص ہارر، ایکشن فلموں اور فیملی ڈراما کی تیاری میں ہمارا کام اہمیت کا حامل ہے۔‘
’مقدار ہی کوالٹی بناتی ہے‘
سعودی سنیما ایسوسی ایشن کی صدر ھناء العمیر نے سعودی انڈسٹری کی جانب سے تیار ہونے والی فلموں کی تعداد کا ذکر کرتے ہوئے کہا کہ ’مقدار ہی کوالٹی کو ممکن بناتی ہے۔‘
انہوں نے اس جانب اشارہ کیا کہ اب ڈیجیٹل پلیٹ فارمز کی وجہ سے سنیما کی شکل کافی حد تک بدل چکی ہے۔ اس شعبے میں ہونے والے نئے تجربات ماضی کے خلا کو پُر کریں گے۔
انہوں نے کہا کہ ’ہم اپنی حکمت عملی مرتب کر کے وہ چیز تیار کر سکتے ہیں جو ہماری نمائندگی کرے اور ہمیں ڈزنی کی پروڈکشن کی پیروی نہ کرنی پڑے۔ یہ ممکن ہے کہ سنیما کی دنیا میں نئی مثال قائم کریں۔‘

تازہ ترین

راولپنڈی ٹیسٹ میں کرکٹ کی تاریخ کا 112 سالہ ریکارڈ ٹوٹ گیا

Published

on

راولپنڈی ٹیسٹ میں کرکٹ کی تاریخ کا 112 سالہ ریکارڈ ٹوٹ گیا

راولپنڈی ٹیسٹ میں کرکٹ کی تاریخ کا 112 سالہ ریکارڈ ٹوٹ گیا

اسلام آباد (صداۓ روس)
پاکستان اورانگلینڈ کے مابین پہلے ٹیسٹ میچ کے پہلے روز کئی ریکارڈ بن گئے جبکہ انگلینڈ نے میچ کے پہلے روز 506 رنز بنا کر 112 سال پرانا ریکارڈ بھی توڑ ڈالا۔ انگلینڈ نے صرف 4 وکٹیں گنوا کر 506 رنز بنالیے اس طرح انگلینڈ نے میچ کے پہلے روز 506 رنز بنا کر اپنا ہی 68 سالہ پرانا ریکارڈ توڑ ڈالا۔ اس سے قبل انگلینڈ نے 1954 میں نوٹنگھم ٹیسٹ میں پاکستان کے خلاف ہی ایک دن میں 496 رنز بنائے تھے۔

ایک دن میں سب سے زیادہ رنز بنانے کا بھی ریکارڈ انگلینڈ ٹیم کے ہی پاس ہی جوانہوں نے ہندوستان کے خلاف 588 اسکور کر کے بنایا تھا۔ 9 دسمبر 1910 کو آسٹریلیا نے جنوبی افریقہ کے خلاف پہلے روز 494 رنز سکور کیے تھے۔ پاکستان اور انگلیند کے میچ کے دوران ایک اور ریکارڈ بھی بنا جو کہ ہیری بروک نے سعود شکیل کو ایک اوور میں لگا تار 6 چوکے لگا کر بنایا ۔ اس سے قبل یہ ریکارڈ ایک اوور میں 5 چوکوں کا ہے جو کہ ہندوستان کے جسپریت بھمرا نے انگلش باؤلر سٹورٹ براٹ کو لگائے تھے۔

راولپنڈی میں جاری میچ کے پہلے روز انگلش بلے بازوں نے پاکستانی باؤلرز کی خوب پٹائی کی اور شاندار بیٹنگ کا مظاہرہ کرتے ہوئے رنز کا پہاڑ کھڑا کر دیا۔ انگلینڈ کے پہلے تینوں بلے باز سینچریز سکور کرنے میں کامیاب ہوئے۔ پاکستانی باؤلرز پہلے روز بمشکل 4 کھلاڑیوں کو ہی آؤٹ کر پائے۔ پاکستان کی جانب سے زاہد محمود نے 2 جبکہ حارث رؤف اور محمد علی نے ایک ایک وکٹ حاصل کی۔

راولپنڈی کرکٹ گراؤنڈ میں آج دونوں ٹیموں کے کپتانوں نے ٹرافی کی تقریب رونمائی میں بھی شرکت کی۔

Continue Reading

ٹرینڈنگ