Connect with us

انٹرنیشنل

یوکرین جنگ کی وجہ سے امریکہ میں ہتھیاروں کی قلت ہوگئی، امریکی حکام

Published

on

یوکرین جنگ کی وجہ سے امریکہ میں ہتھیاروں کی قلت ہوگئی، امریکی حکام

یوکرین جنگ کی وجہ سے امریکہ میں ہتھیاروں کی قلت ہوگئی، امریکی حکام

واشنگٹن (انٹرنیشنل ڈیسک)
امریکی ایوان نمائندگان کے رکن مائیک کویگلی(Mike Quigley) نے کہا ہے کہ ہمارا خیال تھا کہ یوکرین کی جنگ دو تین روز سے زیادہ نہیں چلے گی لیکن آج اس جنگ کو نوماہ ہوگئے ہیں اور ہوسکتا ہے کہ یہ جنگ برسوں تک جاری رہے۔
انہوں نے کہا کہ جنگ کی طوالت نے یوکرین کی ضرورت کے ہتھیاروں کی فراہمی کو مشکلات سے دوچار کردیا ہے اور ہم اسلحے کی شدید قلت کا شکار ہیں۔
دوسری جانب سی این این نے پہلی بار یوکرین کی جانب سے فوجی امداد کی درخواستوں کی ایک فہرست جاری کی اور اس چینل کے دفاعی مبصر نے بھی اس بات پر تشویش ظاہر کی ہے کہ امریکہ یوکرین کی ضروریات پوری کرنے کے قابل نہیں ہے۔
یہ ایسی حالت میں ہے کہ یوکرین کے صدر ویلودیمر زیلنسکی نے یورپ اور امریکہ سے مزید فوجی امداد فراہم کرنے کی درخواست کی ہے۔
ادھر امریکی وزیر دفاع لوئیڈ آسٹن نے کہا کہ امریکہ اب تک اٹھارہ ارب ڈالر سے زائد کی امداد یوکرین کو دے چکا ہے اور یہ سلسلہ آئندہ بھی جاری رہے گا۔
اعداد و شمار کے مطابق امریکہ نے اب تک بیس ہمارس میزائل سسٹم یوکرین کو فراہم کیے ہیں اور آنے والے برسوں میں ایسے اٹھارہ دیگر سسٹم فراہم کرنے کا وعدہ کیا ہے۔
دوسری جانب اطلاعات ہیں کہ یورپی پارلیمنٹ نے یوکرین کے لیے اٹھارہ ارب یورو کی امداد کی منظوری دے دی ہے۔
یورپی پارلیمنٹ کے اڑتیس ارکان نے یوکرین کو امداد کی فراہمی کے بل کی مخالفت کی جبکہ چھبیس نے رائے شماری میں حصہ نہیں لیا۔
یورپی پارلیمنٹ کے قدامت پسند اسپیکر روبرٹو متسولا نے اٹھارہ ارب یورو کی مالی امداد کو یوکرین کے بنیادی ڈھانچے کی تعمیر اور جمہوریت کے فروغ کے لیے انتہائی اہم قرار دیا ہے۔
قرض کی شکل میں یوکرین کو مرحلہ وار دی جانے والی اس امداد کی پہلی قسط آئندہ سال جنوری تک فراہم کیے جانے کی توقع ہے۔

انٹرنیشنل

اسرائیلی فوج کی فائرنگ میں مزید 7 فلطسینی شہید

Published

on

غزہ: (صدائے روس)مغربی کنارے میں اسرائیلی فوج نے ایک علاقے میں چھاپہ کار کارروائی کے دوران فائرنگ کرکے 7 فلسطینی نوجوانوں کو شہید کردیا۔

عالمی خبر رساں ادارے کے مطابق مغربی کنارے کے علاقے جیریکو کے پناہ گزین کیمپ میں اسرائیلی فوج نے علی الصبح چھاپہ مارا اور سرچ آپریشن کے دوران فائرنگ کرکے 7 نوجوانوں کو شہید کردیا۔

اسرائیلی فوج کی اس جارحیت میں 3 فلسطینی نوجوان زخمی بھی ہوئے جن میں سے دو کی حالت نازک بتائی جا رہی ہے۔ زخمی انتہائی نگہداشت کے وارڈ میں زیر علاج ہیں۔
اسرائیلی فوج کے ترجمان کا کہنا ہے کہ اس علاقے میں مسلح نوجوانوں نے 28 جنوری کو چیک پوسٹ پر حملہ کیا تھا جن کی گرفتاری کے لیے آج جانے والی ٹیم پر بھی فائرنگ کی گئی۔

اسرائیلی فوج نے دعویٰ کیا کہ دفاعی فائرنگ میں دو حملہ آوروں سمیت 7 افراد مارے گئے مارے جانے والے نوجوانوں کا تعلق حماس سے تھا اور وہ اس علاقے کے اہم عہدیدار تھے۔

دوسری جانب حماس نے اسرائیل کے اس اقدام کو بزدلانہ قرار دیتے ہوئے کہا کہ فلسطینیوں کی نسل کشی کا بھرپور جواب دیا جائے گا۔

ادھر قابض اسرائیلی فوج نے مغربی کنارے کے ایک اور علاقے میں چھاپہ مار کارروائی کے دوران 48 سالہ خاتون کو حراست میں لیکر نامعلوم مقام پر منتقل کردیا۔

واضح رہے کہ رواں برس کے آغاز سے اب تک اسرائیلی فوج کی جارحیت میں شہید ہونے والے نوجوانوں کی تعداد 43 ہوگئی جن میں 8 بچے شامل ہیں۔

Continue Reading

ٹرینڈنگ